انٹر نیشنلسائنس و ٹیکنالوجی

2030 تک اسمارٹ فونز ختم ہو جائیں گے، نوکیا کے سربراہ کا دعویٰ

موبائل فونز بنانے والی دنیا کی معروف کمپنی نوکیا کے سی ای او پیکا لنڈبرگ نے دعویٰ کیا ہے کہ 2030 تک 6 جی ٹیکنالوجی متعارف ہو جائے گی جس کے بعد اسمارٹ فونز ختم ہو جائیں گے۔
 
غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق ورلڈ اکنامک فورم (ڈبلیو ای ایف) 2022 کی تقریب میں کمپنی کے اعلیٰ سربراہ نے کہا کہ چھ جی ٹیکنالوجی آنے کے بعد موجودہ حالت میں استعمال ہونے والے اسمارٹ فونز متروک ہو جائیں گے۔
 
انہوں نے کہا کہ اسمارٹ فونز میں استعمال ہونے بہت سے فنکشنز انسانی جسم پر چپس(chips) کی صورت میں پیوست یا انسٹال کر دیے جائیں گے۔
 
 
پیکا لنڈبرگ نے یہ واضح نہیں کیا کہ اسمارٹ فونز کی جگہ کون سی ڈیوائس عام انٹرفیس کے طور پر لے گی۔
 
خیال رہے کہ دنیا کے امیر ترین شخص ایلن مسک کی نیورلنک جیسی متعدد کمپنیاں چپس کی تعمیر پر کام کر رہی ہیں جو جسم میں پیوست ہوسکتی ہیں۔
 
ایسی ٹیکنالوجی سامنے آنے کے بعد میٹاورس جیسے تصورات بہت مقبول ہو جائیں گے،وہ ڈیوائسز جو اگمنٹڈ رئیلٹی (اے آر) اور ورچوئل رئیلٹی (وی آر) کے لئے معاونت فراہم کرتے ہیں وہ بھی آنے والے سالوں میں زیادہ مرکزی دھارے میں شامل ہوسکتی ہیں۔

متعلقہ پوسٹ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button