پاکستانجرائملاہور

سیٹھ عابد کی بیٹی کے قتل میں ملازمین کے بھی ملوث ہونے کا انکشاف

لاہور: سیٹھ عابد مرحوم کی بیٹی کے قتل میں گھریلو ملازمین کے بھی ملوث ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔
 
لاہورکے علاقے مسلم ٹاؤن میں معروف کاروباری شخصیت سیٹھ عابد مرحوم کی بیٹی کے قتل میں ان کے لے پالک بیٹے فہد کے ساتھ گھریلو ملازمین کے ملوث ہونے کا بھی انکشاف ہوا ہے۔ پولیس کے مطابق ملازمہ عطیہ نے قتل کے بعدخون آلود بیڈ کی چادریں تبدیل کیں۔ عابد اورشاہد نے قتل میں استعمال ہونے والا اسلحہ چھپایا جبکہ ایک اورملازم روح الاامین ملزم فہد کے ساتھ مقتولہ کو اسپتال لے کرگیا۔
 
پولیس کا کہنا ہے کہ شواہد مٹانے پرتمام ملازمین کو گرفتارکرلیا گیا ہے۔ ملازمہ عطیہ نے پولیس کوبیان دیتے ہوئے کہا کہ ملزم فہد کوٹ لکھپت میں ایک درزی کی لڑکی سے شادی کرنا چاہتا تھا ۔دونوں کی دوستی فیس بک پرہوئی تھی۔ مالکن نے ملزم فہد کو شادی سے منع کیا تھا۔ پولیس کے مطابق ملزم نے شادی سے روکنے پر سیٹھ عابد کی بیٹی کو قتل کیا اوراسے خودکشی کا رنگ دے دیا۔
 
مقتولہ کی پوسٹمارٹم رپورٹ کے مطابق موت کا سبب بننے والی گولی انتہائی قریب سے چلائی گئی۔ دائیں جانب سے ڈیڑھ انچ سے گولی لگی۔ جسم پرگولی کی جگہ کالا نشان موجود ہے جبکہ پورسٹمارٹم کے دوران جسم میں موجود سکہ بھی نکال لیا گیا۔حتمی رپورٹ کے لئے پولیس کو فرانزک رپورٹ کا انتظار ہے۔
 
سیٹھ عابد کی بیٹی کے قتل کا واقعہ جمعے اورہفتے کی درمیانی شب کو پیش آیا تھا۔ پولیس نے قتل کے شبے میں مقتولہ کے ایک منہ بولے بیٹے فہد کو گرفتارکیا تھا۔

متعلقہ پوسٹ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button